بڑی خبر: پاکستان کا بڑا مسئلہ کرپشن یا مہنگائی؟ گیلپ سروے کے دلچسپ نتائج منظر عام پر آگئے

" >

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستانیوں کی اکثریت نے کرپشن نہیں بلکہ مہنگائی کو ملک کا سب سے بڑا مسئلہ قرار دے دیا۔عوامی آراء جاننے کے حوالے سے معروف ادارے گیلپ پاکستان کے نئے سروے میں ملک بھر میں پاکستانیوں سے سوال کیا گیا کہ اس وقت پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ کیا ہے۔اس جواب میں یہ بات

سامنے آئی کہ 53 فیصد پاکستانی مہنگائی ملک کا سب سے بڑا مسئلہ سمجھتے ہیں جب کہ صرف 4 فیصد پاکستانیوں کا خیال ہے کہ کرپشن ملک کا سب سے بڑا مسئلہ ہے۔سروے میں شامل 23 فیصد افراد نے بیروزگاری، 8 فیصد نے کشمیر اور 2 فیصد نے سیاسی عدم استحکام کو پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ قرار دیا۔ سروے میں 4 فیصد نے پانی کے بحران، ایک فیصد نے لوڈ شیڈنگ اور ایک فیصد نے ڈینگی وائرس کو ملک کا سب سے بڑا مسئلہ قرار دیا۔ گیلپ پاکستان اور پلس کنسلٹنٹ کے اشتراک سے کیے گئے حالیہ سرویز میں ہوا جو گزشتہ ماہ یعنی اکتوبر میں کیے گئے۔سروے میں لوگوں سے وفاقی حکومت کے ساتھ ساتھ چاروں صوبائی حکومتوں کی کارکردگی کے حوالے سے بھی الگ الگ سوالات پوچھے گئے۔ لوگوں کی اکثریت اگرچہ خیبرپختون خوا اور پنجاب کی حکومتوں کی کارکردگی سے مطمئن نظر آئے مگر سندھ اور بلوچستان کی کارکردگی کو انہوں نے غیرتسلی بخش قرار دیا۔گیلپ پاکستان کے سروے میں ملک بھر سے صرف 22 فیصد افراد سندھ حکومت کی کارکردگی سے مطمئن نظر آئے جب کہ 46فیصد افراد کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کی کارکردگی سے اطمینان بخش نہیں ہے۔ سروے میں شامل 21 فیصد نے اس سوال کے جواب میں کہا کہ نہ تو وہ مطمئن ہیں اور نہ ہی غیر مطمئن۔ 10 فیصد نے اس سوال کا کوئی جواب نہیں دیا۔حیران کن طور پر سندھ حکومت کی کارکردگی سے سندھ کے اپنے باشندے بھی مطمئن نہ تھے ۔ سندھ میں رہنے والوں میں سے 49 فیصد نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت کی کارکردگی غیر اطمینا ن بخش ہے ۔ البتہ 35 فیصد نے سندھ حکومت کی کارکردگی کو اطمینا ن بخش قرار دیا۔اس سوال پر یہی صورتحال پلس کنسلٹنٹ کے سروے میں بھی نظر آئی اور ملک بھر سے 35 فیصد افراد سندھ حکومت کی کارکردگی سے غیر مطمئن اور صرف 21 فیصد مطمئن نظر آئے جبکہ 27 فیصد نہ تو مطمئن تھے نہ ہی غیر مطمئن ۔سروے میں 17فیصد افراد نے اس سوال کا کوئی جواب نہیں دیا

(Visited 54 times, 1 visits today)