ہر چوری کا سرغنہ نواز شریف ۔۔۔ شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے خلاف بنے مقدمات میں نواز شریف کو کیوں شامل تفتیش کرنے کا فیصلہ ہو گیا ؟ جانیے

" >

اسلام آباد(ویب ڈیسک) نیب نے چوہدری شوگر ملز کیس میں نوازشریف سے بھی تفتیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جیونیوز کے مطابق نیب نے کوٹ لکھپت جیل میں قید سابق وزیراعظم نوازشریف سے تفتیش کے لیے احتساب عدالت اسلام آباد سے اجازت طلب کی ہے۔ نیب کی جانب سے دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا

گیا ہے کہ نوازشریف سے جیل میں تفتیش کی اجازت دی جائے۔ نیب کی درخواست پر عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ لاہور کے کیس میں اس عدالت کا دائرہ اختیار نہیں، عدالت نے نیب کی درخواست واپس کردی۔ واضح رہے کہ نیب لاہور نے چوہدری شوگر ملز کیس میں گزشتہ دنوں مریم نواز کو طلب کیا تھا جس پر وہ نیب میں پیش ہوئیں جب کہ نیب نے 8 اگست کو دوبارہ مریم نواز، حسین اور حسن نواز سمیت عباس شریف کے بیٹے کو بھی طلب کررکھا ہے جبکہ اس کیس میں حمزہ شہباز نیب کی حراست میں ہیں۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق احتساب عدالت نے قومی احتساب بیورو (نیب) کی درخواست مسترد کردی جس میں چوہدری شوگر ملز کیس میں سابق وزیراعظم نواز شریف سے تفتیش کی اجازت طلب کی گئی تھی۔ڈان نیوز کے مطابقاحتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نیب کو ہدایت کی کہ درخواست لاہور کی متعلقہ عدالت میں دائر کی جائے جہاں کا علاقائی دفتر اس معاملے کی تحقیقات کر رہا ہے،اس کے ساتھ جج نے درخواست پراسیکیوشن کو لوٹاتے ہوئے کہا کہ احتساب عدالت اسلام آباد کے پاس اس درخواست کی سماعت کا اختیار نہیں۔ رپورٹ کے مطابق نیب نے حال ہی میں چوہدری شوگر ملز کے حوالے سے تفتیش کا آغاز کیا تھا اور اس سلسلے میں 31 جولائی کو مریم نواز کا بیان بھی قلمبند کیا گیا تھا۔اس ضمن میں نیب نے جب مریم نواز کو طلب کیا تو انہوں نے جواباً کہا کہ وہ تفتیش میں نیب کے احترام کی وجہ سے نہیں بلکہ اسے بے نقاب کرنے کے لیے شامل ہوں گی۔

(Visited 21 times, 1 visits today)