بریکنگ نیوز : ایک ہی دن میں نیب نے نواز شریف کو 2 خوشخبریاں سنا دیا ، میاں نواز شریف کو بڑا ریلیف مل گیا

" >

اسلام آباد(ویب ڈیسک) احتساب عدالت نے قومی احتساب بیورو (نیب) کی درخواست مسترد کردی جس میں چوہدری شوگر ملز کیس میں سابق وزیراعظم نواز شریف سے تفتیش کی اجازت طلب کی گئی تھی۔ڈان نیوز کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نیب کو ہدایت کی کہ درخواست لاہور کی متعلقہ عدالت میں دائر

کی جائے جہاں کا علاقائی دفتر اس معاملے کی تحقیقات کر رہا ہے،اس کے ساتھ جج نے درخواست پراسیکیوشن کو لوٹاتے ہوئے کہا کہ احتساب عدالت اسلام آباد کے پاس اس درخواست کی سماعت کا اختیار نہیں۔ رپورٹ کے مطابق نیب نے حال ہی میں چوہدری شوگر ملز کے حوالے سے تفتیش کا آغاز کیا تھا اور اس سلسلے میں 31 جولائی کو مریم نواز کا بیان بھی قلمبند کیا گیا تھا۔اس ضمن میں نیب نے جب مریم نواز کو طلب کیا تو انہوں نے جواباً کہا کہ وہ تفتیش میں نیب کے احترام کی وجہ سے نہیں بلکہ اسے بے نقاب کرنے کے لیے شامل ہوں گی۔خیال رہے کہ مریم نواز بدھ کے روز نیب حکام کے سامنے پیش ہوئی تھیں، کمپنی کی بڑی شراکت دار کی حیثیت سے انہوں نے چوہدری شوگر ملز کی مشتبہ مالی ٹرانزیکشن کے حوالے سے 45 منٹ تک اپنا بیان ریکارڈ کروایا تھا۔ نیب میں طلبی کے بعد سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’نیب سے واپس آگئی، انہیں بتایا کہ خاندانی کاروبار کے حوالے سے پوچھے گئے سوالات اور کھربوں دفعہ دیے گئے جوابات سے ایجنڈے پر چلنے والی جے آئی ٹی بھی کچھ نہیں پا سکی‘ ’لیکن چونکہ نیب کو لوگوں کو نشانہ بنانے اور ہراساں کرنے کے آلہ کار کے طور پر استعمال کیا جارہا ہے، لہٰذا یہ مضحکہ خیز کھیل جاری رہے گا‘اس کیس میں تحقیقات کے لیے نیب نے حسن اور حسین نواز کو بھی طلب کیا تھا البتہ وہ پیش نہ ہوئے۔شریف خاندان کے اراکین منی لانڈرنگ کے الزامات کے تحت چوہدری شوگر ملز میں مشتبہ شراکت دار کی حیثیت سے تفتیش کا سامنا کررہے ہیں۔مذکورہ شوگر ملز کے مالکان کے خلاف شواہد مبینہ طور پر شہباز شریف اور ان کے بیٹے حمزہ اور سلمان شہباز کی منی لانڈرنگ اور آمدن سے زائد اثاثوں کی تحقیقات میں سامنے آئے تھے۔ دوسری جانب خبر یہ ہے کہ قومی احتساب بیورو(نیب) نے ایل این جی کیس میں نوازشریف کا نام مقدمے سے نکال دیا۔نجی ٹی وی دنیا نیوز نے نیب ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ ایل این جی سکینڈل سے سابق وزیراعظم نواز شریف کا نام مقدمے سے نکال دیا گیا،نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ شاہد خاقان عباسی نے جسمانی ریمانڈمیں بیان ریکارڈکرادیا، سابق وزیراعظم کا کہنا ہے کہ ایل این جی معاہدے اورٹرمینل ٹھیکے کی ذمہ داری لیتاہوں،ایل این جی معاہدہ ملکی وعالمی قوانین کے مطابق کیا،شاہدخاقان عباسی نے کہا کہ توانائی بحران کی وجہ سے قطرسے ایل این جی خریدی، قطرسے ایل این جی دیگرممالک کی نسبت کم نرخ پر خریدی،نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ ایل این جی کیس کی انکوائری میں نوازشریف کانام شامل تھا،شاہد خاقان عباسی کے ذمہ داری لینے پر نوازشریف کا نام مقدمے سے نکال دیاگیا۔

(Visited 382 times, 1 visits today)