ہم افغانستان سے جائیں گے مگر اپنی ان شرائط پر ۔۔۔۔ امریکہ نے پوری دنیا پر واضح کر دیا

" >

واشنگٹن (ویب ڈیسک) امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد نے کہا ہے کہ ہمارا افعانستان سے کوئی بھی انخلا مشروط ہو گا، ہم افغانستان میں ایک اچھے معاہدے کے لئے تیار ہیں ،مذاکرات سے امن معاہدے کی کوشش کررہے ہیں انخلا معاہدے کی نہیں ۔ امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد نے سماجی رابطے کی

ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹوئٹ میں کہا ہے کہ طالبان سے مذاکرات کےنئےدورکے لیے قطر جا رہا ہوں، طالبان نے اشارہ دیا ہے کہ وہ معاہدہ چاہتے ہیں ، ان کا کہنا تھا کہ ہم افغانستان میں ایک اچھے معاہدے کے لئے تیار ہیں ، مذاکرات سے امن معاہدے کی کوشش کررہے ہیں انخلا معاہدے کی نہیں،امریکی نمائندہ خصوصی کا کہنا تھا کہ ہم ایسا امن معاہدہ چاہتے ہیں جو انخلا کا ذریعہ بنے ،ہماری افغانستان میں موجودگی مشروط ہے ،افعانستان سے کوئی بھی انخلا مشروط ہو گا۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق امریکہ اور چین کے درمیان تجارتی جنگ جاری ہے۔ امریکہ کی طرف سے سینکڑوں چینی مصنوعات پر ٹیرف بڑھایا گیا جس کے جواب میں چینی حکومت نے امریکی مصنوعات کے خلاف وہی اقدام کر ڈالا۔ گزشتہ دنوں ایک بار پھر امریکی صدر ٹرمپ کی طرف سے ٹیرف بڑھانے کی دھمکی دی گئی جس پر جیسے کو تیسا کے مصداق چین نے بھی سنگین نتائج کی دھمکی دے ڈالی ہے۔عالمی خبر رساں ایجنسی رائٹرز کے مطابق صدر ٹرمپ نے کہا تھا کہ وہ آئندہ ماہ سے 300ارب ڈالر کی چینی درآمدات پرعائد ٹیرف میں 10فیصد اضافہ کرنے جا رہے ہیں۔صدر ٹرمپ کے اس بیان پر چین نے انہیں متنبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر وہ چینی مصنوعات پر مزید ٹیرف بڑھاتے ہیں تو پھر انتقامی کارروائی کے لیے بھی خود کو تیار رکھیں۔ چینی وزارت خارجہ کی ترجمان ’ہوا چن ینگ ‘ نے پریس بریفنگ میں کہا کہ ”امریکی دباﺅ کے زیراثر چین اپنے موقف سے قطعاً نہیں ہٹے گا۔

(Visited 31 times, 1 visits today)