وہی ہوا جس کا ڈر تھا۔۔۔ امیر ِ قطر کی پاکستان آمد نے سعودی عرب میں ہلچل مچا دی، جدہ سے آنے والی خبر نے وزیر اعظم عمران خان کو شدید پریشان کر دیا

" >

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) امیرِ قطر کی پاکستان آمد کے بعد سعودی شاہی خاندان میں ہلچل پیدا ہو گئی۔تفصیلات کے مطابق اس بات میں کوئی شک نہیں کہ تحریک انصاف کی حکومت میں جہاں پاکستان کو کئی مسائل درپیش آ رہے ہیں وہیں پاکستانی کی خارجہ پالیسی بہترین ہے۔ عمران خان نے وزیراعظم

منتخب ہونے کے بعد کئی ممالک کے کامیاب دورے کیے، وہاں تقاریر کیں، جسے عالمی میڈیا پر بھی شہرت ملی۔اسی طرح سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے بھی پاکستان کا دورہ کیا۔جو کہ دونوں ممالک کے لیے بہت اہمیت کا حامل رہا۔وزیراعظم عمران خان اور محمد بن سلمان کے مابین گہری دوستی کے بھی خوب چرچے رہے۔سعودی عرب نے پاکستان میں سرمایہ کاری کا بھی اعلان کیا۔اگرچہ وزیراعظم عمران خان کا یہ مشن ہے کہ بڑے دوست ممالک پاکستان میں سرمایہ کاری کریں،سعودی عرب کے ساتھ ساتھ قطر نے بھی پاکستان میں سرمایہ کاری کا اعلان کیا۔عمران خان نے بھی قطر کا دورہ کیا جب کہ قطر کے امیرشیخ تمیم حمد الثانی بھی پاکستان تشریف لائے۔اس موقع پر یقیناََ سعودی عرب کے شاہی خاندان میں سوالات اٹھ رہے ہیں۔کیونکہ سعودی اور قطر کے مابین خراب تعلقات ہیں۔جب کہ پاکستان کی خواہش ہے کہ دونوں ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات رہیں۔اسی متعلق گفتگو کرتے ہوئے معروف صحافی نجم سیٹھی کا کہنا تھا کہ قطر کے امیر کی پاکستان آمد کے بعد جدہ میں بھی بہت سوالات اٹھ رہے ہیں کہ آخر یہ پاکستان کیا کر رہا ہے۔جب کہ قطر کی کوشش ہے کہ وہ پاکستان ایران اور قطر کے خلاف قائم محاذ میں امریکہ اور سعودی عرب کا ساتھ نہ دے۔لیکن سیاسی تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ پاکستان کسی بھی ملک کے ساتھ تعلقات خراب نہیں کرنا چاہتا لیکن عمران خان کو اس تمام صورتحال میں کسی ایک ملک کی طرف داری کرنا پڑے گی۔پاکستان یا تو قطر کی کھل کر حمایت کرے گا یا پھر دوسری صورت میں سعودی عرب کا ساتھ دے گا۔

(Visited 12 times, 1 visits today)