ماضی میں عمران خان کی گالم گلوچ کا سامنا اور پھر اچانک پاکستان کا دورہ ۔۔۔۔ امیرِ قطر یہ کڑوہ گھونٹ پینے پر کس طرح آمادہ ہوئے؟ بالاخر اصل کہانی سامنے آگئی

" >

لاہور(نیوز ڈیسک) معروف صحافی نجم سیٹھی کا کہنا ہے کہ حالیہ صورتحال میں قطر بہت اہم پوزیشن پر آ گیاہے۔پاکستان اور قطر ایک دوسرے کی ضرورت بن گئے ہیں۔کیونکہ پاکستان قطر سے گیس لے رہا ہے۔گذشتہ حکومت میں قطر کے ساتھ بہت سارے معاہدوں پر دستخط کیے گئے تھے۔پاکستان کو گیس

چاہئیے جب کہ قطر کو اپنی گیس بیچنی ہے۔اس لیے پاکستان کسی صورت میں بھی قطر کے ساتھ تعلقات خراب نہیں کر سکتا۔کیا پتہ پاکستان نے قطر سے مستقبل میں مزید گیس لینی ہو۔اب یہاں پر صورتحال بہت دلچسپ ہے کہ پاکستان سعودیہ کے ساتھ بھی مل گیا ہے۔امریکہ، سعودی عرب اور یو اے ای نے قطر اور ایران کے خلاف ایک محاذ بنا رکھا ہے۔اس کھیل کے اندر پاکستان بھی شامل ہو گیا ہے۔اس لیے کہا جا سکتا ہے کہ نہ صرف پاکستان کو قطر کی بلکہ قطر کو بھی پاکستان کی ضرورت ہے۔قطر نہیں چاہتے کہ پاکستان کسی صورت بھی ان کے خلاف قائم کیے گئے محاذ کا حصہ بنے۔اس لیے ماضی میں عمران خان نے قطری خاندان کے بارے میں جو گالم گلوچ کی تھی، قطر کے امیر نے کڑوا گھونٹ بھرتے ہوئے وہ بھلا دیا اور پاکستان آ گئے۔اور دونوں حکمرانوں نے یہ تاثر دیا کہ جیسے کوئی بات ہی نہیں ہوئی تھی۔نجم سیٹھی کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کو قطر سے گیس چاہئیے جب کہ قطر چاہتا ہے کہ پاکستان ان کے خلاف محاذ کا حصہ نہ بنے۔جب کہ دوسری جانب قطر کے امیر کی پاکستان آمد کے بعد جدہ میں بھی بہت سوالات اٹھ رہے ہیں کہ یہ پاکستان کیا کر رہا ہے۔واضح رہے کہ عمران خان ماضی میں قطری شہزادے کے بارے میں کہہ چکے ہیں کہ وہ چور ہیں اور کرپشن کرنے میں نواز شریف کا ساتھ دیتے ہیں۔قطری شہزادے کو تو جیل جانا چاہئیے۔واضح رہے امیرقطرشیخ تمیم حمد الثانی پاکستان کے دوروزہ دورے کی تکمیل پراتوار کو واپس روانہ ہو گئے تھے جس کے بعد قطر نے پاکستان کو 3 ارب ڈالر فراہم کرنے کا بھی اعلان کیا۔

(Visited 7 times, 1 visits today)