پاک چین دوستی زندہ باد۔۔۔ چین نے پاکستان کو ایسا ہتھیار دینے کا فیصلہ کر لیا کہ امن دشمنوں کی نیندیں حرام کردیں

" >

بیجنگ( ویب ڈیسک )کے پروجیکٹ چین نے پہلا اوورہالڈ جے ایف تھنڈر17 جنگی طیارہ پاکستان کے حوالے کر دیا۔ چین کے سرکاری روزنامے گلوبل ٹائم نے چائنا ایوی ایشن نیوز کے حوالے سے بدھ کو شائع ہونے والی اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ جے ایف تھنڈر17 جنگی طیارہ کی اوورہالنگ اور ری اسمبلنگ

چینی ایوی ایشن انڈسٹری کارپوریشن(اے وی آئی سی)نے کی ہے جبکہ طیارے کو مارچ میں پاکستان کے حوالے کر دیا گیا تھا۔ انھوں نے کہا کہ یہ پہلی بار ہے کہ جے ایف 17 کو اوور ہال کیا گیا ہے جو کہ جے ایف پراجیکٹ کا ایک سنگ میل ہے۔مذکورہ طیارے کا پہلا اوورہال ٹرائل اینڈ ارر پر مبنی تھا جو مستقبل میں دوسرے سنگل انجن ملٹی رول جے ایف طیاروں کی اوورہالنگ کا سٹینڈرڈ مقرر کرے گا۔ واضح رہے اوورہالنگ میں طیارے کا مرکزی فریم اور انجن کی مرمت یا اس کی تبدیلی ہوتی ہے ۔اس سے قبل خبر یہ تھی کہ کے الیکٹرک نے چین کے ریاستی ادارے چائنا مشینری انجینئرنگ کارپوریشن (CMEC) کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں جس کے تحت پورٹ قاسم، کراچی میں700میگا واٹ کے جدید ترین آئی پی پی بیسڈ پاور پراجیکٹ تعمیر کیا جائے گا۔ پراجیکٹ کا باضابطہ اعلان چین کے دارالحکومت بیجنگ میں ہونے والے دوسرے بیلٹ اینڈ روڈ فورم ( 2nd Belt and Road Forum) کے ساتھ ہونے والے پاکستان ٹریڈ اینڈ انویسٹمنٹ فورم میں کیا گیا۔ پراجیکٹ کا معاہدہ اور دیگر کانٹریکٹس پر کے الیکٹرک کے چیف ایگزیکٹو آفیسر مونس علوی اور سی ایم ای سی کے چیئرمین ژنگ چن نے مشیر برائے تجارت، ٹیکسٹائل، انڈسٹری، پروڈکشن اور سرمایہ کاری عبدالرزاق داؤد کی موجودگی میں دستخط کیے۔ یہ پراجیکٹ پاکستان اور چین کے درمیان اقتصادی تعاون میں سنگ میل ہے اور اس سے پاکستان کے معاشی حب کراچی کو براہ راست فائدہ پہنچے گا۔ وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت، ٹیکسٹائل،

انڈسٹری، پروڈکشن اور سرمایہ کاری عبدالرزاق داؤد نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ یہ مستقبل میں کی جانے والی مشترکہ کوششوں کی ایک کڑی ہے جس سے خطے میں خوشحالی آئے گی۔ میں تمام اسٹیک ہولڈرز سے پراجیکٹ کی جلد تکمیل کے لیے مل کر کام کرنے کی درخواست کرتا ہوں تاکہ کراچی اور پاکستان کو اس سے زیادہ سے زیادہ فائدہ حاصل ہوسکے۔ سی ایم ای سی کے چیئرمین ژنگ چن نے کہا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری اور معاشی ترقی کے بے شمار مواقع موجود ہیں۔ انھوں نے اس پراجیکٹ میں شراکت داری پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ یہ کراچی کی بڑھتی ہوئی بجلی کی طلب کو پورا کرنے میں مدد گار ثابت ہوگا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کے الیکٹرک کے چیف ایگزیکٹو آفیسر مونس علوی نے کہا کہ یہ پراجیکٹ شہر کے پاور انفرااسٹرکچر کو مزید مستحکم بنانے کے لیے کے الیکٹرک کی جانب سے مستقل سرمایہ کاری کی ایک کڑی ہے۔

(Visited 6 times, 1 visits today)