ایسی مثال جو نہ دیکھی نہ سنی : ایک سعودی ماں نے اپنی بیٹیوں کے پاس ہونے کی خوشی میں پاکستانیوں پر کیا احسان کر ڈالا ؟ بڑے کام کی خبر

" >

ریاض(ویب ڈیسک) ایک سعودی خاتون نے اپنے بچوں کی امتحان میں کامیابی پر ان کو انوکھا تحفہ دیکر ایک قابل تقلید مثال قائم کردی ، غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق القصیم یونیورسٹی کی خاتون اہلکار فوزیہ القضیبی نے اپنی بیٹیوں منار اور ریماس کو پرائمری اور مڈل سکولوں میں شاندار کامیابی کا تحفہ

پاکستان اورانڈیا میں ان کے نام سے ہینڈ پمپ قائم کرکے دیا۔ سعودی عرب سے دوسری خبر یہ ہے کہ سعودی اخبار عکاظ کی جانب سے ایک رپورٹ شائع کی گئی ہے جس کے مطابق مملکت میں جعلی ادویات کا دھندہ بہت بڑھ گیا ہے۔ اس کے علاوہ ڈاکٹرز کی بڑی گنتی مریضوں کے علاج میں غفلت سے کام لیتی ہے۔ ان دونوں اسباب کے باعث مریضوں کی جانوں کو شدید خطرات لاحق ہو گئے ہیں۔ ایسا ہی ایک ہسپتال صوبہ عیسر کے شہر بیشہ میں واقع کنگ عبداللہ جنرل ہسپتال ہے۔جہاں کے تقریباً 25 فیصد ڈاکٹرز پر علاج میں غفلت کا الزام لگایا گیا، جن کے باعث اُن کے بیرونِ مُلک سفر پر پابندی عائد کی گئی ہے، لیکن اُنہیں اب تک ہسپتال میں کام کرنے کی اجازت ہے۔ ایسے غفلت شعار ڈاکٹرز کو مریضوں کا علاج کرنے کی اجازت دینا عوام کے لیے تشویش کا باعث ہے۔ مملکت میں موجود کئی لوگوں نے بتایا کہ اُن کے لواحقین ڈاکٹرز کی سنگین طبی غلطی کی وجہ سے دُنیا سے کُوچ کر چکے ہیں۔ جبکہ محکمہ صحت کی جانب سے بھی متاثرہ مریضوں کی شکایت کا ازالہ کرنے اور اُن کے کیسز کو تاخیر سے عدالت میں پیش کرنے پر شہری سیخ پا ہیں۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ جن ڈاکٹرز پر طبی غلطی کا الزام ہے اُن کے خلاف انکوائری مکمل ہونے تک اُنہیں کام سے روک دینا چاہیے۔ دُوسری جانب وزارت صحت کی جانب سے پیش کیے گئے اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ سال ڈاکٹرز کے خلاف 3178 طبی شکایات ریکارڈ ہوئیں، جن میں سب سے زیادہ شکایات ڈاکٹرز کی جانب سے مرض کی غلط تشخیص سے متعلق تھیں۔

(Visited 124 times, 1 visits today)