بریکنگ نیوز : بڑی چھوٹ ۔۔۔۔۔ چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے شریف خاندان کو بڑی خوشخبری سنا دی

" >

لاہور(ویب ڈیسک) نیب کی جانب سے شریف خاندان کی خواتین کو طلبی کے نوٹسز منسوخ کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ نیب نے یہ فیصلہ چئیرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کے حکم پرجاری کیا۔ شریف خاندان کے خلاف مبینہ منی لانڈرنگ کیس پر نیب کا اعلامیہ جاری ہوا جس میں بتایا گیا ہے

کہ شریف خاندان کی خواتین کے طلبی نوٹس منسوخ کر دئیے گئے ہیں۔ چئیرمین نیب شریف فیملی کے خلاف کیسز کی براہ راست نگرانی کریں گے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ ڈی جی نیب نے لاہور میں چئیرمین نیب کو شریف خاندان کے خلاف کیسز پر بریفنگ دی۔ چئیرمین نیب نے شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز اس کے علاوہ رابعہ عمران اور جویریہ علی کو طلبی کے نوٹسز منسوخ کر دئیے۔ چئیرمین نیب نے شریف فیملی کو سوالنامہ بھجوانے کے احکامات جاری کر دئیے۔ خیال رہے قومی احتساب بیورو ( نیب) لاہور کی جانب سے سابق وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی اہلیہ اور صاحبزادیوں کو نوٹسز جاری کیے گئے تھے۔نیب لاہور کی جانب سے سابق وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی اہلیہ اور صاحبزادیوں کو طلبی کے نوٹسز کے بعد شریف فیملی نے وکلاء سے مشاورت شروع کر دی تھی ۔ ذرائع کے مطابق شریف فیملی کے افراد اور وکلاء کے درمیان نیب کے نوٹسز کے اجراء پر تفصیلی نشست ہوئی جس میں تمام قانونی پہلوؤں پر غور و خوض کیا گیا ۔نیب کی جانب سے آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز شریف کو 17اپریل ، ان کی صاحبزادیوں رابعہ عمران کو 18اپریل سہ پہر تین بجے جبکہ جویریہ علی کو 19اپریل سہ پہر تین بجے نیب لاہور ہیڈ کوارٹر میں پیش ہونے کا حکم دیا گیا تھا ۔واضح رہے کہ حمزہ شہباز کو بھی شوگر ملز کیس میں15اپریل اورآمدن سے زائد اثاثہ جات کے کیس میں 16 اپریل کو طلب کیا گیا تھا۔تاہم اب نیب کی جانب سے ایک اہم فیصلہ سامنے آیا ہے جس کے تحت نیب نے شریف خاندان کی خواتین کو طلبی کے نوٹسز منسوخ کر دئیے ہیں۔

(Visited 44 times, 1 visits today)