وہی ہوا جس کا ڈر تھا : فواد چوہدری کی چھٹی ؟؟؟ نیا وزیراطلاعات بننے کی خبروں کے فوری بعد ڈاکٹر بابراعوان خود میدان میں آگئے ، بڑی بریکنگ نیوز دے دی

" >

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) تحریک انصاف کے رہنما ڈاکٹر بابر اعوان نے فواد چوہدری کو وزارت اطلاعات سے ہٹا کر یہ ذمہ داری خود کو سونپے جانے کی خبروں کی تردید کی ہے۔ نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق ڈاکٹر بابر اعوان نے وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات کی ہے جس

میں مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات کے بعد جب ان سے وزارت اطلاعات کے حوالے سے بات کی گئی تو انہوں نے فواد چوہدری کو عہدے سے ہٹانے کی خبروں کی سختی سے تردید کی ۔ انہوں نے کہا کہ فواد چوہدری کو وزیر اطلاعات کے عہدے سے ہٹانے کی خبر پلانٹڈ لگتی ہے جس پر قطعی طور پر یقین نہیں کیا جانا چاہیے۔ ’ میں نے کل شام بھی وزیر اعظم سے ملاقات کی تھی اور آج بھی ملاقات کی ہے، ان ملاقاتوں میں صرف قانونی اور آئینی معاملات پر بات چیت ہوئی ہے، میں پہلے بھی حکومت میں تھا اور اب بھی حکومت میں ہوں‘۔ واضح رہے کہ نجی ٹی وی دنیا نیوز نے خبر دی تھی کہ وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کو عہدے سے ہٹا کر ان کی جگہ بابر اعوان کو مشیر اطلاعات کی ذمہ داری دیے جانے کا امکان ہے۔ واضح رہے کہ نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق وزیر اعظم نے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کو ان کے عہدے سے ہٹا کر انہیں انفارمیشن ٹیکنالوجی کی وزارت دینے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ فواد چوہدری کی جگہ اس اہم ترین وزارت کی ذمہ داری بابر اعوان کو سونپے جانے کا امکان ہے۔ انہیں مشیر اطلاعات بنایا جاسکتا ہے لیکن ان کی تعیناتی نندی پور کیس میں کلیئرنس سے مشروط کی گئی ہے، بابر اعوان کے خلاف ریفرنس پر فیصلہ ایک ہفتے میں آنے کا امکان ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بابر اعوان کے ساتھ ساتھ وزارت اطلاعات کیلئے وزیر تعلیم شفقت محمود کا نام بھی آیا ہے۔ دنیا نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی خاور گھمن نے کہا کہ اس وزارت کیلئے فیصل جاوید خان کا نام بھی لیا جارہا ہے لیکن سینیٹر فیصل جاوید نے انہیں خود کال کرکے کہا تھا کہ وہ کوئی بھی عہدہ لینے کے حق میں نہیں ہیں اور بطور سینیٹر پارٹی کی جانب سے جو ذمہ داریاں سونپی گئی ہیں ان سے ہی خوش ہیں۔

(Visited 98 times, 1 visits today)