اس طرح تو ہوتا ہے پھر اس طرح کے کاموں میں :ن لیگ کی خواتین نے اپنے قائد نواز شریف کو نیا لقب دے دیا

" >

لاہور (ویب ڈیسک) کوٹ لکھپت جیل کے باہر دوران احتجاج پاکستان مسلم لیگ ن کی خواتین کی زبان پھسل گئی اور انہوں نے اپنے قائد نواز شریف کے خلاف ہی نعرے لگانے شروع کر دئیے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ کوٹ لکھپت جیل کے باہر ن لیگ کے کارکنان احتجاج کر رہے ہیں
اور ان کا یہ کہنا ہے کہ نواز شریف کے ساتھ جیل میں اچھا سلوک نہیں کیا جا رہا ہے۔اس موقع پر ن لیگی خواتین نے اپنے قائد نواز شریف کے خلاف نعرے لگا دئیے۔رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ نواز شریف کے حق میں نعرے بازی کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ ن کی خواتین کی زبان پھسل گئی اور انہوں نے کہا کہ ‘گلی گلی میں کوڑا ہے نواز شریف چوڑا ہے’۔واضح رہے اس سے قبل بھی کئی بار سیاسی رہنماؤں کی زبان پھسلی ہے۔بعض سیاسی رہمنا جوش خطابت میں ایسی بات کہہ بیٹھتے ہیں جو اگلے بندے کو ہنسنے پر مجبور کر دیتی ہیں۔ایک بار تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان ن الیکشن سے قبل جوش خطابت میں یہ کہہ دیا تھا کہ آپ شیر پر مہر لگائیں۔ ایک بار نواز شریف کی جڑانوالہ میں جلسے کے دوران زبان پھسل گئی۔نواز شریف جلسے کے شرکاء سے کہنے لگے جو لوگ سمجھتے ہیں کہ میر ی نا اہلی صیح ہوئی وہ لوگ ہاتھ کھڑا کریں جس پر جلسے میں موجود تمام شرکاء کی جانب سے ہاتھ کھڑے کر دیئے گئے جس پر انہیں اپنے لفظوں کی ادائیگی کا احساس بعد میں ہوا کہ انہوں نے جوش خطابت میں لوگوں سے کیا کہہ دیا ہے ۔اسی طرح مسلم لیگ ن کے رہنما دانیال عزیز نے جوش خطابت میں سابق وزیر اعظم نواز شریف اور مریم نواز کو بہن بھائی قرار دیا تھا،ایک بار ن لیگ کہ ہی رہنما زعیم قادری کی زبان پھسلی اور کہا کہ نواز شریف نا اہل ہو جائیں گے۔جب کہ سابق وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کی زبان کا پھسلنا تو عام بات ہے۔ایک تقریب میں قائم علی شاہ خطاب کیلئے آئے تو انہوں نے آصف علی زرداری کے قصیدے پڑھنا شروع کر دیئے اسی دوران ان کی زبان پھسلی اورجوش خطابت میں زرداری کو درباری بول دیا جس پر تمام پارٹی جیالے ہنسنے لگے۔
[wpna_ad placement_id=”964352193767265_964352353767249″]

(Visited 1 times, 1 visits today)

اپنا تبصرہ بھیجیں