صحافت بھی کوئی کرنے والا کام ہے :نواز شریف نے عارف نظامی کو کس عہدے کی پیشکش کی تھی؟ انکشاف ہو گیا

" >

لاہور (ویب ڈیسک)نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے عارف نظامی نے کہا کہ جب میاں نواز شریف بھاری مینڈیٹ سے الیکشن جیتے تو میرے بہت اچھے تعلقات تھے۔ ان دنوں میں نواز شریف نے مجھے بلایا اور کہا کہ عارف صاحب یہ کیا صحافت میں لگے ہو۔

انہوں نے مجھے بورڈ آف انوئسٹمنٹ کے چیئر مین کی پیشکش کی۔۔ بعد میں یہ عہدہ ہمایوں اختر کو دیا گیا تھا ۔ تو میں نے میاں صاحب کو جواب دیا کہ میاں صاحب مجھے معاف ہی کریں۔ مجھے یہ کام نہیں آتا۔ انہوں نے کہا ایسی پیشکش کرنا ہر سیاسی جماعت کا ایجنڈا ہوتا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ جب کوئی صحافی سفیر ، وزیر یا کرکٹ بورڈ کا چیئر مین تعینات کیا جاتا ہے تو ان کی کریڈیبلٹی ختم ہو جاتی ہے۔ پھر ڈھٹائی کے ساتھ واپس آکر مضمون اور کالم بھی لکھانا شروع کر دیتے ہیں ۔ اداریے بھی لکھتے ہیں ۔ ان لوگوں کو چاہیے کہ یا تو ان لوگوں کو صحافت چھوڑ دینی چاہیے کیونکہ دوسرے ممالک میں میں بھی صحافی مشیر بنتے ہیں ، وہ پھر صحافت چھوڑ دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا یہ ہمارے معاشرے کا افسوسناک پہلو ہے ۔
یہ بھی پڑھیں :عمران حکومت کے آئی ایم ایف کے پاس جانے یا دوست ممالک سے قرض لینے میں کیا فرق ہے اور دونوں صورتوں میں فائدے نقصانات کیا ہیں ؟ بی بی سی کی خصوصی رپورٹ ملاحظہ کیجیے
یہ بھی پڑھیں : ایف آئی اے ان ایکشن : عمران خان کی ہمشیرہ علیمہ خان کے بعد کن بڑے بڑے خاندانوں کی خواتین سے کرپشن تحقیقات شروع ہونے والی ہے ؟ پردہ نشینوں کے یہ نام آپ کو دنگ کر ڈالیں گے

(Visited 72 times, 1 visits today)

اپنا تبصرہ بھیجیں