توبہ توبہ : یہ کام شریف آدمی تو بالکل نہیں کر سکتا ۔۔۔۔۔ راجہ پرویز اشرف کس بات پر فکر مند ہیں ؟ اس خبر میں جانیے

" >

اسلام آباد(ویب ڈیسک)اسلام آباد ذیلی دارے کم کرنے اور بہتری لانے کے لیے کمیٹی قائم کردی گئی ہے۔اعلامیہ کے مطابق کمیٹی دو ہفتوں میں رپورٹ پیش کرے گی۔ ا س بات کا فیصلہ قومی اسمبلی کے اجلا س میں کیا گیا۔راجہ پرویز اشرف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایوان 22 کروڑ

عوام کی دانش گاہ ہے لیکن یہاں ایک دوسری کی تضحیک کے لیے فکرے کسے ہیں۔ انہوں نے کہا کی صورتحال یہ ہے کہ شریف آدمی ایوان کی کارروائی نہیں دیکھ سکتا۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ آج نیب خود اپنی صفائیاں پیش کر رہا ہے، عدالتیں نیب کو سیاست زدہ کہہ رہی ہیں، عمران خان اب تو کنٹینر سے نیچے اتر آئیں وہی پرانی تقاریر کر رہے ہیں۔پنجاب اسمبلی میں گفتگو کرتے ہوئے ہوئے حمزہ شہباز نے کہا کہ نیب کے پیچھے نیازی ہے، نیب نیازی صاحب کا بغل بچہ ہے،کابینہ میں ایسے لوگ ہیں جن پر نیب مقدمات ہیں، اخلاقی جرات ہے تو ہیلی کاپٹر پر کیے سیر سپاٹوں کا جواب دیں۔انہوں کہا کہ ایک ماہ گزر گیا نیب شہباز شریف کے خلاف کچھ ثابت نہیں کر سکا، کابینہ میں نیب زدہ وزرا بیٹھے ہیں، عمران خان نیب کے اتحادی بنے ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ نیب خود کل صفائیاں پیش کر رہا تھا، وقت یہ آگیا ہے کہ سپریم کورٹ بھی نیب کو سیاست زدہ قرار دے دیا ہے ۔حمزہ شہباز کا کہنا تھا کہ جھوٹ پر جھوٹ اور یوٹرن پر یوٹرن کی سیاست جاری ہے قرض کی بجائے خود کشی کا اعلان کرنے والے آج کشکول اٹھا کر پھر رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان اڑھائی ماہ جتنے یوٹرن لئے قوم احتساب کرے گی، کنٹینر کے وعدے جھوٹے ثابت ہوں گے۔حمزہ شہباز نے سوال اٹھایا کہ عمران خان نیازی بھول کیوں جاتے ہیں کہ انہیں بنی گالا تجاوزات کا جرمانہ بھرنا ہے اور علیمہ خان بھی آف شور کمپنی کا حساب دیں حکومت ہر محاذ پر جھوٹ بول رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ آئی جی کو چپڑاسی کی طرح تبدیل کرکے نیازی صاحب کے وزیراعلیٰ سپریم کورٹ جا کر معافی مانگتے ہیں، خوف ہے کہ پچاس لاکھ گھروں کا وعدہ تو کرلیا اب بنائیں گے کیسے؟

(Visited 159 times, 1 visits today)

اپنا تبصرہ بھیجیں